Main Menu

تیسرا ایکروزہ: پاکستانی گیند بازو ں کی دھنائی،انگلش ٹیم کا444 رنز کا نیا عالمی ریکارڈ، سیریز جیت لی

انگلستان نے پاکستان کو تیسرے ایکروزہ میچ میں 169 دوڑوں سے شکست دیکر پانچ ایکروزہ میچوں کی سیریز تین صفر سے جیت لی۔

ٹرینٹ برج میں میزبان ٹیم کے بلے بازوں نے مہمان ٹیم کے گیندبازوں کی درگت بناتے ہوئے 444 رنز کا نیا عالمی ریکارڈبنا ڈالا جس کے دباﺅ کی پاکستان ٹیم تاب نہ لا سکی اور42.4 اوور میں275 پر آﺅٹ ہو گئی۔

اظہر علی کے ٹاس ہارنے کے بعد پاکستانی گیند باز انگلش بلے بازوں کے رحم و کرم پر رہے جنہوں نے قصاب بن کر پاکستان گیند بازوں کی پٹائی کی۔افتتاحی بلے باز ہیلز(رنز171 چوکے22 چھکے4) اور جے روٹ (86 رنز8 چوکے)نے اپنی ٹیم کے مجموعہ کو ہمالیہ تک پہنچانے کے مشن کی بنیا د رکھی۔

بعد میں کپتان مورگن(57* رنز ، 5چوکے، 3چھکے) اور بٹلر( رنز90*، 7چوکے،7 چھکے ) نے اپنی شاندار بلے بازی سے دس برس قبل 2006 میں سری لنکا کی جانب سے ہالینڈ کے خلاف چار سو تینتالیس رنزکے عالمی ریکارڈ کو توڑتے ہوئے انگلستان کو نئے عالمی ریکارڈ کا مالک بنا دیا۔

پاکستان کے لیئے سب سے مہنگے گیند باز وہاب ریاض رہے جن کے دس اوورز میں110 رنزبنائے گئے۔حسن علی نے دس اوورز میں74 رنز دیکر دو وکٹیں حاصل کیں۔

پہلی دو وکٹیں جلد گر جانے کے باوجودپاکستان کا عالمی ریکارڈ ہدف کے تعاقب میں آغاز ٹھیک تھا۔شرجیل خان نے پہلے 10 اوورز میں پاکستان کا مجموعہ83 رنز پر پہنچا دیا تھا لیکن اسی اوور کی آخری گیند پروہ آﺅٹ ہوئے تو ٹیم کے حوصلے پست ہو گئے۔

شرجیل خان نے تیس گیندوں پر58رنز12 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے سکور کیئے۔ دیگر بلے بازوں میںسرفراز نے38، نواز نے34 اور محمد عامر نے28 گیند وں پر58 رنز بنائے جس میں4 چھکے اور5 چوکے شامل تھے۔ووکس نے چار کھلاڑی آﺅٹ کیئے۔

پاکستان سیریز کا پہلا میچ ساﺅتھمپٹن میں44 رنز سے اور دوسرا میچ لارڈز میں چار وکٹوں سے ہار گیا تھا۔

سیریز کے آخری دو میچ:
یکم ستمبر ہیڈنگلے، لیڈز
چارستمبر کارڈف، ویلز

یہ بھی یاد رہے کہ پاکستان انگلستان کے خلاف چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز دو، دو سے برابر کرنے میں کا میاب ہوگیا تھا جس کے بعد پاکستان عالمی درجہ بندی میں پہلے نمبر پر آگیا۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*