Main Menu

اولڈ ٹریفرڈ ٹی ٹونٹی: آخری معرکہ میں پاکستان کی بے رحمانہ بلے بازی، شاہانہ فتح

شرجیل خان اور خالد لطیف پر مشتمل نئی افتتاحی جوڑی کی بے رحمانہ بلے بازی نے انگلش گیند بازوں کی بینڈ بجا کر پاکستان کو نو وکٹوں کی شاہانہ فتح سے ہمکنار کردیا۔

مانچسٹر میں کھیلا گیا دورہ برطانیہ کا اکلوتا ٹی ٹونٹی وکٹ کیپر سرفرا ز احمد کا بحثیت کپتا ن پہلا امتحان تھاجس میں بابر اعظم نے5.1اوورز قبل چوکا لگا پاکستان کو فتح دلوادی۔

خالدلطیف 59 رنز بنا کر ناقابل شکست رہے۔ان کی باری میں8چوکے اور 2چھکے شامل تھے۔انہوں نے شرجیل کے ساتھ مل کر آغاز ہی سے انگلش گیند بازوں کے ساتھ ایک قصائی والا سلوک کیا۔136 رنز کے تعاقب میں چوکوں چھکوں کی بارش دیکھ کر انگلش ٹیم کے حوصلے پست ہو گئے۔دونوں نے پہلی وکٹ پر ایک سو سات رنز کی شراکت بنا ئی۔ دونوں نے چھکے لگا کر اپنی نصف سینچریاں مکمل کیں۔

سرفراز بحیثیت کپتان پہلے میچ میں 'سرفراز'

شرجیل کی باری(59) میں7چوکے اور3 چھکے شامل تھے، انہیں عادل رشید کی گیند پر معین علی نے کیچ کیا۔ یہ انگلش بلے بازوں کی میچ میں اکلوتی کامیابی تھی۔
اس سے قبل پاکستان کے گیند بازوں نے پروفیشنل انداز میں انگلش بلے بازوں کو 20اوورز میں 135/7کے مجموعے تک محدو د کر دیا۔ افتتاحی بلے بازوں نے کچھ جارحانہ موڈ دکھایا لیکن جیسے ہی ہیلز(37) اور رائے(21) کی وکٹیں گریں انگلش بلے بازہمت ہارتے ہوئے نظر آئے۔

آخری دوایکروزہ میچوں سے باہر بٹھائے جانے والے وہاب ریاض نے شاندار واپسی کرتے ہوئے اٹھارہ رنز کے بدلے تین آﺅٹ کیئے جس پر انہیں میچ کے بہترین کھلاڑی کا ایوارڈ دیا گیا۔عماد وسیم اور حسن علی نے بھی عمدہ گیندیں کیں تاہم عامر اورسہیل تنویر بنا وکٹ لیئے مہنگے ثابت ہوئے۔

wahab-riaz-vs-eng
قومی ٹیم یہ میچ نئے کپتان سرفراز احمدکی قیادت میں کھیلی جنہیں شاہد آفریدی کی جگہ یہ ذمہ داری سونپی گئی ہے۔نئے کپتان اور قومی ٹیم دورہ انگلستان کا آخری میچ جیت کرایکروزہ سیریز کی ناکامی کے غم کوکسی حد تک کم کرنے میں کامیاب ہو گئے۔

مزے کی بات یہ ہے کہ انگلستان کے خلاف سب سے زیادہ میچ کھیلنے والے شاہدآفریدی(12) عمر اکمل(11) اور محمد حفیظ( 9) اس بار ٹیم کا حصہ نہیں تھے تاہم شعیب ملک جن کے پاس انگلستان کے خلاف سب سے زیادہ (دو سو چونتیس ) رنز بنانے کا اعزاز حاصل ہے ٹیم کا حصہ بنائے گئے۔ٹیم کے نئے کپتان سرفراز نے انگلستان کے خلاف چار میچوں میں پچیس رنز جوڑ رکھے ہیں۔

pak-vs-eng-t20
انگلستان کے خلاف پاکستان کا بیس بیس مقابلوں کے لیے ریکارڈ اچھا نہیں تھا۔پاکستان اور انگلستان کے درمیان جو پہلے پانچ ٹی ٹونٹی سیریز ہو ئی ان میں انگلستان کا پلہ بھاری رہا۔ تین سیریز انگلستان، ایک پاکستان جیتا جبکہ ایک برابری پر ختم ہوئی تھی۔اب سکور تین ، دو اور ایک ہو گیا ہے۔

ماضی کی سیریز کا ریکارڈ
دوہزار چھ میں انگلستان میں اکلوتا بیس بیس مقابلہ پاکستان نے جیتا۔
دو ہزار نو دس میں امارات میں سیریز ایک ایک سے برابررہی۔
دو ہزار دس میں انگلستان میںپاکستان دو صفر سے ہارا
دو ہزار گیارہ بارہ میں متحدہ عرب امارات میں پاکستان کو دو ایک سے ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔
دو ہزار پندر سولہ میں انگلستان نے پاکستان کو تین صفر سے شکست دی۔

دونوں ممالک کے درمیان مجموعی طور پر تیرہ میچ کھیلے گئے جس میں پاکستان تین جیتا،انگلستان نوجبکہ ایک ٹائی رہا۔دو ہزار سولہ میں پاکستان کا ریکارڈ یہ ہے۔ گیارہ میچز کھیلے۔چار جیتے اور سات ہارے۔

یاد رہے کہ دورہ برطانیہ میں پاکستان نے ٹیسٹ سیریز دو، دو سے برابر کھیلی جبکہ ایکروزہ سیریز میں اسے چار ایک سے ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔

پاکستان کو اب ویسٹ انڈیز کا انتظار ہے، جس کے ساتھ اس کی تینوں فارمیٹس میں سیریز متحدہ امارات میں ستمبر کے آخری عشرے سے شروع ہوگی۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*