Main Menu

 لڑکیوں کو کھیل کے میدان سے دور رکھ کر ان کا ٹیلنٹ ضائع کیا جارہا ہے: رگبی کھلاڑیوں سے بات چیت

rugbyPlayersWomenPak

 رگبی کے کھیل سے منسلک پاکستانی خواتین کھلاڑیوں کا کہنا ہے کہ کھیل دنیا کو امن کا پیغام دیتا ہے ، وفاق اور پنجاب کی طرح فاٹا اور خیبر پختونخواہ میں بھی رگبی کا بے پناہ ٹیلنٹ موجود ہے لیکن وہاں لڑکیوں کو کھیل کے میدان سے دور رکھ کر ان کے ٹیلنٹ کو ضائع کیا جارہا ہے ۔

 پاکستان رگبی یونین کے زیر اہتما م ہونے والی پہلی ویمن نیشنل چمپئن شپ کے موقع پر فاٹا ، کے پی کے اور واپڈا کی خواتین کھلاڑیوں نے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان رگبی فیڈریشن خواتین میں رگبی کے فروغ کے لئے اپنا کردارادا کررہی ہے ، آرمی کی ٹیم ایونٹ میں سخت حریف ہے جیتنے کی کوشش کریں گے

 فاٹا کی کھلاڑی عائشہ کا کہنا تھا کہ کھیل دنیا کو امن کا پیغام دیتا ہے لیکن وہ جس سوسائٹی میں رہتی ہیں وہاں خواتین کی کھیلوں میں شمولیت کو عجیب نظروں سے دیکھا جاتا ہے ۔ فاٹا کی ایک اور کھلاڑی سارہ کا کہنا تھا کہ کھیل صحت مند زندگی کے لئے نہایت اہم ہے اس لئے خواتین پر میدانوں میں آنے پر کوئی پابندی نہیں ہونی چاہئے ۔ خیبرپختوانخواہ کی کھلاڑی نائلہ کا کہنا تھا کہ کے پی کے کی خواتین کا میدانوں میں آنا بڑی بات ہے جب تک خواتین کو کھیلوں کے میدانوں تک رسائی نہیں ملے گی خواتین پاکستان کی جیت میں کردار ادا نہیں کرسکیں گی ۔

کے پی کے کی ایک اور کھلاڑی مشال نے کہا کہ دنیا بھر میں خواتین کھلاڑی اپنے اپنے ممالک اور علاقوں کا نام روشن کررہی ہیں لیکن ہمارے ہاں لڑکیوں کو کھیل کی وہ سہولیات دستیاب نہیں جو غیرملکی خواتین کھلاڑیوں کو حاصل ہیں ۔

 واپڈا کی کپتان وجیہہ کریم اور کھلاڑی سمیراکوثر کا کہنا تھا کہ پاکستان رگبی یونین کی جانب سے پہلی ویمن رگبی چمپئن شپ کا انعقاد خوش آئند ہے اس طرز کے ایونٹس کے انعقاد سے خواتین کے اعتماد میں اضافہ ہوتا ہے جبکہ اس سے رگبی کے کھیل کو بھی فروغ ملے گا۔ رگبی یونین میں کھیلنے والی کھلاڑیوں نے پاکستان رگبی یونین کی جانب سے ملنے والی سہولیات اور انتظامات کو تسلی بخش قراردیتے ہوئے مستقبل میں خواتین کے لئے مزید ایونٹس کے انعقاد کا مطالبہ کیا۔

اس موقع پر فاٹا ٹیم کے منیجر نوراسلم آفریدی ، واپڈا کے کوچ خالد بھٹی ، عمرعثمان اور بابر نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان رگبی یونین کی جانب سے پہلی ویمن رگبی چمپئن شپ کا انعقاد قابل تحسین ہے ، تما م کھلاڑی نیشنل لیول کے ایونٹ میں کھیل کر بہت خوش ہیں ، ایونٹ میں آرمی کی ٹیم ٹف ہے ، جیتنے کی کوشش کریں گے ۔

ماضی کے انٹرنیشنل رگبی پلیئراور فاٹا ٹیم کے منیجر نور اسلم کا کہناتھا کہ ویمن کے لئے رگبی یونین نے چمپئن شپ کا انعقاد کرکے بہت اچھا کام کیا اس سے رگبی کے کھیل کو فروغ ملنے کے ساتھ ساتھ خواتین میں رگبی کا کھیل مقبول بھی ہوگا۔ واپڈا ٹیم کے کوچ خالد بھٹی کا کہنا تھا کہ ایونٹ میں آرمی ہمیشہ کی طرح سخت حریف رہی ہے اس ایونٹ میں بھی واپڈا کا مقابلہ آرمی سے ہی ہوتا نظر آرہا ہے لیکن واپڈا کی کوشش ہوگی کہ وہ پاکستان آرمی کی کھلاڑیوں کو شکست دینے میں کامیاب رہیں۔

Qadir 01
انٹرویو:اشفاق مغل / تصاویر : عبدالقادر






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*